آرٹیکل

خلیجی ملک میں ایک شادی کی تقریب بڑی دھوم دھام سے جاری تھی

Written by Admin

خلیجی ملک میں ایک شادی کی تقریب بڑی دھوم دھام سے جاری تھی دلہادلہن بڑی شان وشوکت کے ساتھ سٹیج پربراجمان تھے دلہن نےدلہاکے کان میں کہااپنی ماں کوسٹیج سے اتارو کیونکہ میں اسے ناپسندکرتی ہوں دلہااٹھامائیک پکڑا اورتین دفعہ اعلان کیامجھ سےمیری ماں کون خریدے گا

اعلان سن کرحاضرین پرسناٹاطاری ہوگیاپھردلہابولامیںاپنی ماں کوخود ہی خریدوں گا اس نے شادی کی انگوٹھی اتارپھینکی اوردلہن کوطلاق دیدی ماں کے

قدموں کوبوسہ دیتے ہوئےاعلان سن کرحاضرین پرسناٹاطاری ہوگیاپھردلہابولامیںاپنی ماں کوخود ہی خریدوں گا اس نے شادی کی انگوٹھی اتارپھینکی

اوردلہن کوطلاق دیدی ماں کے قدموں کوبوسہ دیتے ہوئےکہامیں نے نفع کاسوداکیاہے حاضرین میں سے ایک آدمی نے کھڑے ہوکراعلان کیامیں اس نوجوان کیساتھ اپنی بیٹی کانکاح کرتاہوں اورکہاکہ اس سے بہترخاوندمیری بیٹی کونہیں مل سکتااس نوجوان نےد نیابھی کمالی اورجنت بھی پالی۔

Comments are closed.

About the author

Admin

Leave a Comment